پاکستان کو دہشت گردوں کے مالی معاون ممالک کی خبریں غلط ثابت ہوئیں

کل بھارتی میڈیا اور خبر رساں ایجنسی رائٹرز نے من گھڑت خبر جاری کرتے ہوئے پاکستان کو فنانشیل ایکشن ٹاسک فورس کی جانب سے دہشت گردوں کی مالی معاونت کرنے والے ممالک کی فہرست میں شامل کیے جانے کا دعوی کیا تھا

پاکستان کو دہشت گردوں کے مالی معاون ممالک کی خبریں غلط ثابت ہوئیں

پاکستانی میڈیا کے مطابق عالمی تنظیم کی جانب سے پاکستان کو دہشت گردوں کی مالی معاونت کرنے والے ممالک کی فہرست میں شامل نہیں کیا گیا اور  اس حوالے  سے بھارتی میڈیا اور معتبر خبر رساں ایجنسی   رائٹرز کی خبریں غلط ثابت ہوئی ہیں۔

بین الاقوامی منی لانڈرنگ، رقم کے غیر قانونی استعمال اور دیگر مالیاتی امور پر نظر رکھنے والی ’فنانشیل ایکشن ٹاسک فورس‘ (ایف اے ٹی ایف) کا 5 روزہ  اجلاس   پیرس میں منعقد ہوا، جس  دوران پاکستان کو دہشت گردی کی مالی  اعانت  کرنے والے ممالک کی فہرست میں شامل نہیں کیا گیا۔

اس سےپیشتر  مغربی خبر رساں ادارے رائٹراور بھارتی  پریس نے یہ خبر اڑائی تھی کہ  جمعرات کی شب  پاکستان کی جانب سے چین اور خلیجی ممالک کی حمایت کھو دینے کے بعد پاکستان کو باضا بطہ طورشدت پسند اور دہشت گرد عناصر کی مالی مدد کرنے والے ممالک  کی گرے لسٹ میں شامل کیا گیا  ہے ۔ تا ہم پاکستان کو بدنام کرنے کی  کوشش پر مبنی یہ خبر من گھڑت ثابت ہوئی۔

اس حوالے سے قرارداد  متحدہ امریکہ نے پیش کی تھی، جس میں اس نے یہ مؤقف اپنایا تھا کہ  پاکستان کو دہشت گرد عناصر سے روابط منقطع کرنے پر دباؤ بڑھایا جائے تاکہ افغانستان اور امریکہ میں مبینہ پاکستانی مداخلت کو روکا جا سکے۔ اگر پاکستان کو مذکورہ گرے لسٹ میں شامل  کر  لیا جاتا تو پھر اس سے  پاکستان اور امریکہ کے باہمی تعلقات میں مزید تناؤ آجاتا  اور  پاکستان کو بیرونی سرمایہ کاری اورشعبہ بینکاری  میں کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا۔

خیال رہے کہ اس سے قبل پاکستان کو مذکورہ  فہرست میں شامل کرنے کی کوشش کی گئی تھی جسے  پاکستان کے دوست ممالک کی کوششوں سے تین ماہ کی مہلت میں تبدیل کردیا گیا تھا اس کے لیے پاکستان نے غیر معمولی لابی بھی کی تھی۔

واضح رہے کہ چین، ترکی اور خلیج تعاون کونسل (جی سی سی ) کے بعض ممالک نے امریکی اقدامات کی مخالفت کرتے ہوئے پاکستان کے خلاف قرار داد کو بے عمل کردیا  تھا۔

اس قرار داد میں برطانیہ ، فرانس اور جرمنی نے امریکی پابندیوں کی تائید کرتے ہوئے پاکستان کے خلاف ووٹ دیا تھا۔



متعللقہ خبریں