کیاعمران خان پاکستان کی سیاست میں بھونچال برپا کرنے والے ہیں؟سیاسی جماعتوں کی اپنےرہنماوں پرکڑی نگاہ

عمران خان کی جانب سے 29 اپریل کے لاہور جلسے کے دوران بڑی وکٹ گرنے کے اعلان کے بعد چوہدری نثار اور اعتزاز احسن کے بارے میں پی ٹی آئی میں شامل ہونے کی قیاس آرائِاں کی جا رہی ہیں

کیاعمران خان پاکستان کی سیاست میں بھونچال برپا کرنے والے ہیں؟سیاسی جماعتوں کی اپنےرہنماوں پرکڑی نگاہ

پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر اور وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے ان افواہوں کو مسترد کردیا کہ چوہدری نثار پارٹی چھوڑ رہے ہیں جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما اعتزاز احسن نےبھی ان افواہوں کی تردید کی ہے کہ وہ پارٹی چھوڑ کر پی ٹی آئی میں شامل ہو رہے ہیں۔

یاد رہے کہ عمران خان کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ 29 اپریل کے لاہور جلسے کے دوران بڑی وکٹ گرے گی تاہم انہوں نے کسی کا نام نہیں بتایا تھا۔ عمران خان کے دعویٰ کے بعد چوہدری نثار اور اعتزاز احسن کے بارے میں قیاس آرائیاں کی جارہی تھیں کہ ان میں سے کوئی ایک شخصیت پی ٹی آئی میں شامل ہوسکتی ہے۔ اعتزاز احسن کی طرف سے ذاتی طور پر پی ٹی آئی میں شمولیت کی افواہوں کی تردید کردی گئی ہے جبکہ چوہدری نثار کے قریبی دوست اور مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے ان کی پی ٹی آئی میں شمولیت کے حوالے سے افواہوں کی تردید کردی ہے اور کہا ہے کہ چوہدری نثار مسلم لیگ ن چھوڑ دیں، ایسا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ 

عمران خان نے ایک ٹی وی انٹرویو کے دوران چوہدری نثار کو پی ٹی آئی میں شمولیت کی دعوت بھی دی تھی۔

واضح رہے کہ چوہدری نثار نے تنازعات کے باعث پارٹی سے کنارہ کشی اختیار کر رکھی ہے، جس کے باعث یہ قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ وہ پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر لیں گے تاہم اب تک ان کی جانب سے کوئی تصدیق یا تردید نہیں کی گئی۔



متعللقہ خبریں